موضوع: چین او پاکستان آر وزی ہژمی کھنوخیں ریکرڈ سرا نیاہ دارغ ائے ضرورت

چی اے روش پیشا پاکستان ائے وزیر خاررجہ شاہ محمود قریشی چین شز غئے ساں ہموزا آں ہانی ہم عہدہ آگو گند او نند بیسا۔آن ہاں چینی وزیر خارجہ آگو کشمیر ائے انتظامی معاملہ آنی اندرا ہندوستان وٹاژ کھزی آ روغ والائیں بدلاؤ آنی بارو آ گپ جھزغاں۔اشی آژ رندا ہڑدوں ملک آنی وٹاژ یکھ شریخیں پیرا جاری کھزی آ شزغئے سا۔پیرا اندرا گوشتی آ شز غئے سا کہ یکھ پرامن، پکو، بہر داری او تعاون داروخین او وشحال جنوبی آسیا آپا مچھیں دھر آنر یا ہند بیسؤ کار کھنغ بائید ایں او پھڈا داروخیں معاملہ آنر گپ او حور آگو حل کھزی آ روغ بائید ایں۔ہمیں واجھا کھل آنی مفاد محفوظ بان۔ہمیں ٹوک اشکھنغا تہ باز جوان مان کھائے لیکن پرچے کہ ہمیں ٹوک آر جموں کشمیر آگو گنڈزی آ شزا ہمیں واسطہ ہمیں سوال ضرور پیدا بی کہ چھے پاکستان آر نصیحت داسی آ وؤغیں کہ آنن پھڈا داروخیں معاملہ آنر گپ او حور آگو حل کھنغ ائے کار اندرا پھجی آ جکھی؟ اگر ٹوک ہمشین تہ سرو این سوال تہ اشیں کہ چھے دہشتگردی آر دیما بھڑتھؤ ہچھ مسلہ آر حل کھزی آ رؤ؟ او دیگر اشی آگو گنڈزی این سوال اشیں کہ پکوئیں طریقہ آگو دہشتگردی آر کھئے دیما برغئیں او پاکستان ائے ڈگار آژ ہندوستان اندرا دہشتگردی آر دیما برغ والائیں چھختر تنظیم آنر اقوام متحدہ ائے واسطہ داروخین کمیٹی آ عالمی دہشتگرد قرار داسا او پرچے؟ ہمیں سوال آنی چھے ولدی ایں چین او پاکستان آگر۔اے اگر کشمیر ائے گپ جھزی آ رؤغیں تہ اے تہ سچائی استوئی استین کہ کشمیر یکھ رجواڑا آ او بر صغیر ائے آجوئی آژ رندا رجواڑا آنر ہچھ یکھ ملک آگو دست یکھ کھنغی آ۔کشمیر ائے الحق ہماں ہند ائے واگ داروخ آں ہندوستان آگو کھز غئے سا او تھاں وخت آ کھز غئے سا ہر کھس آر سما ایں۔ نی الحاق بارو آ آکیری ایں فیصلہ دی نویس غئے سا کہ پاکستان وٹاژ قبائلی حملہ بیس غئے سا او گڈا کشمیر اندرا ہما کہ تباہے او لٹ پھر ائے ماحول قائم بیس غئے سا آنہی آش رندا ہی مہا راجہ آ الحاق ائے منغ نامہ سرا دستخط کھز غئے ساں پدھر این ٹوک این کہ الحاق مچھیں ریاست جموں کشمیر ائے بیس غئے سا ہما ہی اندرا ہماں بہر دی اوار این ہماں پاکستان ائے ناجائز قوضہ اندرئیں۔خیالا دارے کہ ہمیں علاقہ آر پاکستان او چین ائے ہمیں پروجیکٹ آگو گنڈزی آ رؤغین مہا ہی اندرا چین مزائیں زرکاری کھن غیئں او ہما ہی آر چین پاکستان اقتصادی راہداری ائے نام داسی آ شزا ہمیں ہڑدوئیں ملک آنی ہمیں شریخین پروجیکٹ ہندوستان آر قبول نئیں او ہمیں واسطہ اشی آ ہڑدوئیں ملک آنی خلاف احتجاج کھزا۔ چین ائے وزیر خارجہ آ وزی پاکستانی ہم عہدہ آگو شریخیں پیرا سرا دستخط کھنغ آژ پیشا اے ویچار کھزا کہ مقبوضہ کشمیر آژ بیسؤ ہی آہانی شریخین پروجیکٹ گزی۔چھے آہانی ویچار آ ہمیں جوائیں ٹوک ایں زوری کھسئے بہر سرا قوضہ کھزی آ شزغئیں علاقہ ائے اصل این دھر آنژ پھول کھنغ آژ سوا اینگیں کار کھزی آ روغ بائید این او چے اینگیں کار کھنوخ آر اخلاقی یا قانونی طور سرا ہمیں حق این کہ آن ہچھ دوہمی آر بہرداری او تعاون ائے مطلو پوہ کھنتھ یا سبق دا؟