گائے کےتحفظ کے نام پر تشدد میں ملوث لوگوں کے خلاف کارروائی کی جانی چاہئے: وزیر اعظم

وزیر اعظم نریندر مودی نے کہا ہے کہ ان لوگوں کے خلاف سخت کارروائی کی جانی چاہئے، جو گائے کے تحفظ کے نام پر تشدد میں ملوث ہیں۔ پارلیمانی امور کے وزیر اننت کمار نے کل پارٹی میٹنگ کے بعد میڈیا کے افراد کو تفصیل بتاتے ہوئے کہا کہ وزیر اعظم نے یہ بھی کہا کہ ریاستی سرکاروں کو اس طرح کے لوگوں کے خلاف کارروائی کرنی چاہئے۔ حکومت نے یہ پارلیمنٹ کے مانسون اجلاس سے پہلے  بلائی تھی۔ جناب مودی نے کہا کہ گائیوں کے تحفظ کے لئے قوانین موجود ہیں اور قانون اپنے ہاتھ میں لینا قابل قبول نہیں ہے۔

وزیر اعظم نے یہ بھی کہا کہ اس طرح کے معاملات کو سیاسی اور فرقے وارانہ رنگ دینے کی کوشش کی جارہی ہے، جس سے ملک کو کوئی فائدہ نہیں ہوگا۔ جناب مودی نے سیاسی پارٹیوں سے زور دے کر کہا کہ وہ بد عنوانی کے خلاف مقابلہ کرنے کے لئے متحد ہوجائیں۔

جناب اننت کمار نے کہا کہ وزیر اعظم نے پورے ملک میں اشیاء اور خدمات ٹیکس (جی ایس ٹی) کے نفاذ میں تعاون کرنے کے لئے پارٹیوں کا شکریہ ادا کیا۔ پارلیمنٹ کے مانسون اجلاس کی کارروائی بلا رکاوٹ چلانے میں اپوزیشن کی حمایت حاصل کرنے کی غرض سے سبھی پارٹیوں کی میٹنگ بلائی گئی تھی۔ اس میٹنگ میں کانگریس، سی پی آئی، سماج وادی پارٹی، این سی پی اور دوسری اپوزیشن پارٹیوں کے رہنمائوں نے حصہ لیا۔ البتہ ترنمول کانگریس نے میٹنگ کا بائیکاٹ کیا۔