کاٹھمنڈو میں بمسٹیک کی پندرہویں وزارتی میٹنگ ختم

کثیر سطحی تکنیکی اور اقتصادی تعاون کے خلیج بنگال کی پہل یعنی بمسٹیک کی پندرہویں وزارتی میٹنگ جمعہ کو کاٹھمنڈو میں ختم ہوگئی۔ میٹنگ کے بعد ایک مشترکہ بیان میں ممبران نے اس بات سے اتفاق کیا کہ اپنی اجتماعی کوششوں کو مزید تیز کیا جائے تاکہ گروپ کے اغراض و مقاصد کو حاصل کیا جاسکے۔ انھوں نے بمسٹیک کو زیادہ مضبوط، زیادہ مؤثر اور ثمرآور بنانے کا وعدہ بھی کیا۔

ارکان نے اتفاق کیا کہ کاروبار اور سرمایہ کاری میں زیادہ تعاون کی ضرورت ہے تاکہ خلیج بنگال میں علاقائی سالمیت کو مزید مستحکم کیا جاسکے۔ وزراء خارجہ نے اس بات پر اطمینان ظاہر کیا کہ بمسٹیک گرڈ کے قیام کے سلسلے میں مفاہمت نامہ پر دستخط  کے لئے تیار ہے۔ انھوں نے جے آئی پی ایم ای انڈیا کے تیارہ کردہ بمسٹیک ٹیلی میڈیسن شروع کیے جانے کا بھی خیرمقدم کیا، جس کا مقصد خطے کے اہم میڈیکل اداروں کے مابین شراکت داری کو مضبوط کرنا ہے۔ ارکان نے دہشت گردی سے لڑنے کے اپنے لیڈروں کے مضبوط عزم کا بھی اعادہ کیا۔

اس سے قبل ورکنگ اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے وزیر خارجہ سشما سوراج نے کہا کہ بمسٹیک بھارت کے لئے پڑوسی کو اوّلیت اور ایکٹ ایسٹ کی ہماری خارجہ پالیسی کی اہم ترین ترجیحات کو پورا کرنے کے لئے ایک فطری انتخاب ہے۔ انھوں نے یہ انکشاف بھی کیا کہ بھارت اس برس اکتوبر میں قدرتی آفات کی صورت میں نمٹنے سے متعلق بمسٹیک کی اوّلین مشقوں کی میزبانی کرے گا۔