اقوام متحدہ میانمارمیں جاری تشدد پر بند کمرے میں اجلاس کرے گا

اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل میانمار کی رکھائن ریاست میں جاری تشدد کے سلسلے میں بند کمرے میں اجلاس منعقد کرے گی۔اس میٹنگ  کے لئے برطانیہ اور سویڈن نے درخواست  دی تھی۔پچھلے ماہ کی 25 تاھریخ کو روہنگیا تشدد پسندوں کے ذریعہ پولس چوکیوں پر حملے کے بعد فوج کی جوابی کارروائی کی وجہ سے رکھائن ریاست میں نقل مکانی کا سلسلہ شروع ہو گیا تھا اور تقریبا تین لاکھ ستر ہزار روہنگیا مسلم اپنے گھروں کو چھوڑنے پر مجبور ہو گئے۔پچھلے ہفتے اقوا م متحدہ کے سکریٹری جنرل انٹوینو گتریس نے سلامتی کونسل کو خط لکھ کر ارکان پر زور دیا کہ وہ میانمار کے حکام کو سیکورٹی آپریشن بند کرنے کا پیغام بھیجیں۔