پاکستان مقبوضہ کشمیر سے اپنا قبضہ ہٹائے:ہندوستان کا مطالبہ

’’پاکستان مقبوضہ کشمیر کو خالی کرے:ہندوستان کا بیان‘‘ یہ سرخی روزنامہ اسٹیٹس مین کی ہے ۔اس خبر کے مطابق ہندوستان نے اقوام متحدہ کی جنرل اسمبلی میں مطالبہ کیا ہے کہ اس کا جارح پڑوسی پاکستان مقبوضہ کشمیر پر اپنا غیر قانونی قبضہ ختم کرے،اپنی سر زمین پر دہشت گردی کے اڈوں کو تباہ کر ے ،دہشت گردوں کو رقوم کی فراہمی روک دے اور فوجی عدالتو ں کو شہریوں پر مقدمہ چلانے سے باز رکھے۔ آخری مطالبے کا واضح اشارہ ہندوستانی بحریہ کے سابق افسر کلبھوشن جادو کی طرف تھا۔ جنیوا میں عالمی ادارے میں پاکستان کے تیسرے یونیورسل پیریاڈک ریویو یعنی یو پی آر کے موقع پر ہندوستانی نمائندے کے حوالے سے اخبار رقمطراز ہے کہ اسلام آباد حکومت کو انٹر نیشنل کووے ننٹ آن پولیٹکل اینڈ سول رائٹس اور کونسلر رائٹس پر ویانا کنونشن کے تحت اپنی ذمہ داریوں کو پورا کرنا چاہئے جس میں غیر ملکی شہریوں تک قونصل کی بلا تفریق رسائی بھی شامل ہے۔ اس کے علاوہ ہندوستان نے یہ بھی مطالبہ کیا کہ پاکستان اپنی سر زمین پر اقلیتوں کو ہراساں کرنا بند کرے، توہین مذہب سے متعلق قوانین کے غلط استعمال کو روکے اور اقلیتوں کی جبراً بتدیلئ مذہب اور شادیوں پرپابندی عائد کرے،سندھ بلوچستان اور خیبر پختون خوا میں سیاسی منحرفین اور جائز ناقدین کو نشانہ بنانا بند کرے اور سلامتی ایجنسیوں کے ذریعہ صحافیوں کے اغوا اور ہلاکتوں کو روکے۔