نئی دہلی اور اسلام آباد کے درمیان دہشت گردی پر بات چیت ممکن: بھارت

بھارت نے کہا ہے کہ پاکستان کے ساتھ بات چیت اور دہشت گردی ساتھ ساتھ نہیں چل سکتے لیکن دہشت گردی کے معاملے پر بات چیت ہوسکتی ہے۔ وزارت خارجہ کے ترجمان رویش کمار نے کل نئی دہلی میں نامہ نگار کے ایک سوال کا جواب دیتے ہوئے اس بات کی تصدیق کی کہ تھائی لینڈ میں پچھلے مہینے کی 26 تاریخ کو بھارت اور پاکستان کے قومی سلامتی مشیروں کی میٹنگ ہوئی تھی۔ جناب کمار نے کہا کہ اس بات چیت میں دہشت گردی اور سرحد پار سے پھیلائی جانے والی دہشت گردی پر توجہ مرکوز کی گئی۔ ترجمان نے البتہ، یہ واضح کردیا کہ اس کا یہ مطلب نہ نکالا جائے کہ بھارت کے اس موقف میں کوئی نرمی آگئی ہے کہ بات چیت اور دہشت گردی ساتھ ساتھ نہیں چل سکتے۔

جناب رویش کمار نے یہ بھی کہا کہ فوجی کارروائیوں کے ڈائرکٹر جنرلوں کی میٹنگ اور پاکستان رینجرس اور بھارت کے بی ایس ایف اہلکاروں کے درمیان میٹنگ جیسے بہت سے طریقے اور وسیلے موجود ہیں جن کے ذریعے دونوں ملک متعلقہ معاملات پر تبادلہ خیال کرسکتے ہیں۔