ریڈیو فیچر:عوامی فنکار ۔ نظیر اکبرآبادی

نظیر اکبرآبادی

نظیر اکبرآبادی ایسی باطنی پکڈنڈیوں کے خضرِ راہ تھے جنہوں نے انسان اور انسانیت تک رسائی کے لئے زیادہ مستعمل راستوں کا استعمال نہ کرکے نئی راہیں کھوجیں اور وہاں جا پہنچے جہاں کسی کا گزر نہ تھا۔ نظیر کی غیر معمولی سماجی رسائی کی ایک وجہ یہ بھی تھی کہ اس زمانے کے معاشرے میں خصوصاً اعلیٰ سماج کے طبقے کی جانب سے علم و فن کے اکتساب کو بہت اہمیت دی جاتی ہے۔ گارساں دی تاسی ایسا پہلا مصنف تھاجس نے نظیر کے بارے میں لکھا ہے کہ نظیر کا پہلا غیر رسمی مجموعہ دیو ناگری رسم الخط میں شائع ہوا جو کہ ۴۲ صفحات پر مشتمل ہے۔ اس طرح کی اور بہت سی اہم جانکاریاں ہم نے یکجا کی ہیں آپ کے لئے آل انڈیا ریڈیو کےاس فیچر میں جس کا نام ہے عوامی فنکار نظیر اکبرآبادی۔