کنٹرول لائن پر سیکورٹی کومزید مضبوط بنایا جا رہا ہے :وزیر دفاع

وزیر دفاع نرملا سیتا رمن نے کہا ہے کہ جیش محمد کے جن دہشت گردوں نے جموں میں ہفتے کو فوجی کیمپ پر حملہ کیا تھا ان کا تعلق پاکستان سے ہے ۔ جموں میں میڈیا سے خطاب کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ پاکستان کو اپنی اس غلط حرکت کا خمیازہ بھگتنا پڑے گا۔

وزیر دفاع نے کا کہ ان دہشت گردوں کے خلاف شواہد جمع کر لئے گئے ہیں جو پاکستان کو دے دیئے جائیں گے ۔ انہوں نے کہا کہ ایک کے بعد ایک شواہد دیئے جانے کے باوجود پاکستان نے کوئی کارروائی نہیں کی ۔ انہوں نے کہا کہ اس طرح کے دہشت گردانہ حملوں میں پاکستان کا ملوث ہونا کئی مرتبہ ثابت ہو چکا ہے ۔محترمہ سیتا رمن جموں و کشمیر میں آج حفاظتی بندو بست کا جائزہ لینے کے لئے جموں میں تھیں۔ انہیں فوج کے سینئر افسران نے بھی تازہ ترین صورتحال سے آگاہ کیا۔انہوں نے کہا کہ کنٹرول لائن پر سیکورٹی کو اور مضبوط بنایا جا رہا ہے ۔

وزیر دفاع نے وزیر اعلیٰ محبوبہ مفتی سے بھی ملاقات کی اور صورتحال کا تبادلہ خیال کیا۔ انہوں نے جموں کے فوجی استپال کا دورہ کیا اور دہشت گردانہ حملے میں زخمی ہونے والوں کی صحت کے بارے میں معلومات حاصل کی ۔