سکھ یاتریوں کے معاملے پر ہندوستان کا پاکستان سے احتجاج

بھارت نے پاکستان جانے والے سکھ یاتریوں سے بھارتی سفارتکاروں اور قونصل خانے کے اہلکاروں کی ملاقات پر روک لگائے جانے پر پاکستان سے سخت احتجاج کیا ہے۔ ایک بیان میں وزارتِ خارجہ نے کہا ہے کہ اِس طرح کا قدم ویانا کنوونشن کی واضح خلاف ورزی ہے۔ اِس کے علاوہ بھارت اور پاکستان میں سفارتی اور قونصل خانے کے اہلکاروں کے ساتھ روا رکھے جانے والے سلوک سے متعلق ضابطۂ عمل اور مذہبی مقامات کا دورہ کرنے سے متعلق باہمی اقرارنامے کی بھی خلاف ورزی ہے۔ مذہبی مقامات کا دورہ کرنے سے متعلق باہمی سمجھوتے کے تحت تقریباً 1800 سکھ یاتریوں کا ایک جتھہ پاکستان گیا ہوا ہے۔ قونصل خانے کی ٹیمیں اس مہینے کی 12 تاریخ کو واگھہ ریلولے اسٹیشن پر یاتریوں کے پہنچنے پر اُن سے ملاقات نہیں کر سکی تھیں۔ پاکستان میں بھارتی ہائی کمشنر کو بھی کل گرودوارہ پنجہ صاحب میں داخل ہونے سے منع کر دیا گیا تھا۔ اگرچہ یہ لوگ یاتریوں سے ملنے کیلئے پروگرام کے مطابق گئے تھے۔