نیٹ نیچورلٹی ضابطوں کو ٹیلی کام کمیشن کی منظوری

ٹیلی کام کمیشن نے نیٹ نیچورلٹی ضابطوں کو منظوری دے دی ہے جن کی رو سے سروس فراہم کرنے والی کمپنوں پر انٹرنیٹ کے مواد اور خدمات کے خلاف بھید بھاؤ کرنے کی ممانعت ہے۔ اس فیصلے کا مقصد ملک میں کھلے اور آزادانہ انٹرنیٹ کو یقینی بنانا ہے۔ ٹیلی کام کمیشن نے نئی دلّی میں ایک میٹنگ میں یہ فیصلہ کیا۔ یہ کمیشن ٹیلی کام محکمے کا اعلیٰ ترین فیصلہ ساز ادارہ ہے۔ کمیشن کے چیئرمین ارونا سندرراجن نے میٹنگ کے بعد نامہ نگاروں کو بتایا کہ ریموٹ سرجری اور آٹونومس کاروں جیسی کچھ اہمیت کے حامل ایپلی کیشن یا خدمات کو نیٹ نیچورلٹی ڈھانچے کے دائرہ کار سے باہر رکھا جائیگا۔