بریگزٹ معاہدہ برطانوی پارلیمنٹ میں دوسری بار مسترد

برطانوی پارلیمنٹ نے یوروپی یونین سے علیحدگی کے وزیراعظم تھریسا مے کے معاہدے کو دوسری بار میں 149 ووٹوں سے مسترد کردیا ہے۔ دارالعوام میں کل رات اس معاہدے کی مخالفت میں 391 ووٹ دیئے جبکہ اس کے حق میں 242 ووٹ ڈالے گئے۔

اس نتیجے کے سبب برطانیہ میں ایک غیر یقینی صورتحال پیدا ہوگئی ہے جبکہ ملک کے لئے یوروپی یونین سے علیحدہ ہونے میں محض 2 ہفتے رہ گئے ہیں۔ اس شکست کے بعد محترمہ مے نے پارلیمنٹ سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ وہ یوروپی یونین سے کسی معاہدے کے بغیر علیحدگی کے امکانی نقصانات سے باخبر ہیں اور قانون سازوں کو اب اس دشوار مرحلے سے گزرنا ہوگا کہ اگلا قدم کیا ہو۔

ارکان پارلیمنٹ اب  اس سلسلے میں ووٹ دینے کے لئے تیار ہیں کہ یوروپی یونین سے کسی معاہدے کے بغیر علیحدگی اختیار کرلی جائے جیسا کہ محترمہ مے نے وعدہ کیا ہے۔