پولنگ کے دن اور اس سے ایک دن پہلے اخبارات و رسائل میں اشتہارات شائع کرانے پر پابندی

انتخابی کمیشن نے تمام سیاسی پارٹیوں، امیدواروں اور تنظیموں پر پابندی عائد کردی ہے کہ وہ پولنگ کے دن یا پولنگ سے ایک دن پہلے کمیشن سے منظوری حاصل کئے بغیر اخبارات میں کوئی اشتہار شائع نہیں کریں گے۔ یہ پابندی انتخابات کے تمام مرحلوں کیلئے نافذ ہوگی۔ کمیشن نے کہا ہے کہ اشتہارات پر پہلے سے منظوری کے عمل میں آسانی فراہم کرنے کیلئے ریاستی اور ضلع سطح پر میڈیا سرٹیفکیشن اور مانیٹرنگ کمیٹیوں کو فوری طور پر چوکس کیا جانا چاہئے تاکہ سیاسی پارٹیوں سے حاصل ہونے والے اس طرح کے اشتہارات کو پہلے سے ہی جانچ پڑتال کے بعد منظوری دی جاسکے۔

الیکشن کمیشن نے کہا ہے کہ الیکشن کے آخری مرحلے میں اس طرح کے اشتہارات پورے انتخابی عمل کو خراب کرتے ہیں۔ اس نے سبھی ریاستوں کے سبھی اعلیٰ انتخابی افسروں کو خط لکھا ہے اور سبھی سیاسی پارٹیوں، امیدواروں اور اخباروں کو اس سلسلے میں ہدایات جاری کی ہیں۔ کمیشن نے کہا ہے کہ اس طرح کے معاملے میں ملوث امیدواروں اور پارٹیوں کو وضاحت پیش کرنے کا کوئی موقع نہیں دیا جائے گا۔ انتخابی ادارے نے کہا کہ کسی بھی اشتعال انگیز یا نفرت آمیز اشتہارات کی وجہ سے کوئی ناخوشگوار واقعہ نہ پیش آئے، اس بات کو یقینی بنانے کیلئے وہ اپنے آئینی اختیارات کا استعمال کررہی ہے اور اس لئے اخباروں کو ہدایت دی ہے کہ پولنگ کے دن اور اس سے ایک دن پہلے پرنٹ میڈیا کوئی بھی اشتہار شائع نہ کرے۔