21-08-2019 جہاں نما

صدر امریکہ کی پاکستانی وزیراعظم کو کشمیر معاملے میں صبر و تحمل کی تلقین

۔امریکہ کے صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے کشمیر کے معاملے میں پاکستان کے وزیراعظم عمران خان کو صبر و تحمل کا مظاہرہ کرنے اور ہندوستان کے ساتھ بیان بازی میں اعتدال کی تلقین کی ہے۔ اسی سے متعلق روزنامہ ٹائمز آف انڈیا کی ایک رپورٹ کے مطابق صدر امریکہ نے ٹیلی فون پر عمران خان سے بات چیت کرتے ہوئے کہاہے کہ پاکستان کو کشمیر کے تعلق سے ہندوستان کے ساتھ کسی طرح کے تنازعہ سے گریز کرنا چاہئے اور دو طرفہ سیاسی اورعسکری کشیدگی کے خاتمے کے لئے عملی اقدامات کرنے چاہئیں۔ رپورٹ کے مطابق صدر امریکہ نے بعد ازاں اپنے ٹوئٹر پیغام میں کہا کہ انہوں نے اپنے دونوں اچھے دوستوں ہندوستان کےو زیراعظم نریندر مودی اور پاکستان کے وزیراعظم عمران خان سے بات کی ہے اور دونوں رہنماؤں سے تجارت اور اسٹریٹجک پارٹنر شپ کے ساتھ ساتھ کشمیر کے مسئلے پر تبادلہ خیال کرتے ہوئے خطے میں کشیدگی ختم کرنے کے لئے دیانتداری کے ساتھ کوششیں کرنے کا مطالبہ کیا ہے۔رپورٹ میں مزید کہا گیا ہے کہ ٹوئٹر پر کئے گئے صدر امریکہ کے تبصرے پاکستان کے لئے حوصلہ افزا نہیں ہیں جو کشمیر میں ہندوستان کے ذریعے حالیہ کارروائی کو ہندوستان کا اندرونی معاملہ تسلیم کرنے کے لئے تیار نہیں ہے۔ رپورٹ میں مزید کہا گیا ہے کہ جناب ڈونلڈ ٹرمپ کی ٹیلی فون پر عمران خان سے بات چیت اور بعدازاں ٹوئٹر پر تبصرے پاکستان کے لئے بڑا دھچکہ ہیں۔

جموں و کشمیر کے معاملے میں صدر ڈونلڈ ٹرمپ کے بعد امریکہ کے وزیر دفاع نے بھی کشمیر کے معاملے میں ہندوستان کے موقف کی ستائش کرتے ہوئے جموں و کشمیر کی حالیہ سرگرمیوں کو ہندوستان کا اندرونی معاملہ قرار دیا ہے۔ اس بارے میں روزنامہ انڈین ایکسپریس کی ایک رپورٹ کے مطابق امریکہ کے وزیر دفاع مارک ٹی ایسپر نے ہندوستان کے اپنے ہم منصب راج ناتھ سنگھ سے منگل کو اس سلسلے میں تبادلہ خیال کیا۔ واضح رہے کہ یہ پہلا موقع ہے جب امریکہ نے جموں و کشمیر کو ہندوستان کا اندرونی معاملہ قرار دیا ہے۔ رپورٹ میں مزید کہا گیا ہے کہ جناب ایسپر کے ساتھ تبادلہ خیال میں جناب راج ناتھ سنگھ نے پاکستان کی جانب سے جاری دہشت گردی کا معاملہ اٹھایا اور خطے میں امن و استحکام کے لئے ہندوستان کی جانب سے جاری کوششوں میں امریکہ کی حمایت کے لئے اظہار تشکر کیا۔ رپورٹ کے مطابق جناب ایسپر نے دفعہ 370 کے تعلق سے جموں و کشمیر میں کئے گئے اقدامات کو ہندوستان کا اندرونی معاملہ قرار دیتے ہوئے کہا ہے کہ اس ضمن میں تمام تصفیہ طلب امور پر ہندوستان اور پاکستان کو باہمی بات چیت کے ذریعے فیصلہ کرنا چاہیے۔ واضح رہے کہ ایک دن قبل اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل کے مستقل رکن روس نے بھی تبصرہ کرتے ہوئے کہا تھا کہ جموں و کشمیر میں دفعہ 370 کے تعلق سے تبدیلیاں ہندوستان کے آئین کے تحت ہی کی گئی ہیں۔

 

۔ امریکہ کے کروز میزائل کے تجربے پر چین اور روس کا اظہار تشویش

۔ روس اور چین نے امریکہ کے ذریعے ایک درمیانہ دوری کے کروز میزائل کے تجربے پر اپنی گہری تشویش کا اظہار کیا ہے۔ اسی سے متعلق روزنامہ ہندوستان ٹائمز کی ایک رپورٹ کے مطابق امریکہ کے ذریعہ کروز میزائل کے تجربے پر چین اور روس نے تیکھے ردعمل کا اظہار کیا ہے۔ چین نے کہا ہے کہ امریکہ کے اس عمل سے دنیا میں اسلحہ کی ایک نئی دوڑ شروع ہوجائے گی جبکہ روس کا کہنا ہے کہ امریکہ نے کروز میزائل کے تجربے سے دنیا میں عسکری کشیدگی اور اس میں اضافے کا آغاز کردیا ہے۔ رپورٹ میں چین کی وزارت خارجہ کے ترجمان کے حوالے سے مزید کہا گیا ہے کہ امریکہ کے ذریعہ کروز میزائل کے تجربے سے اسلحہ کی دوڑ کا نیا دور شروع ہوجائے گا جو عسکری کشیدگی کا سبب بنے گا اور اس کے عالمی اور علاقائی سلامتی اور استحکام پر منفی اثرات مرتب ہوں گے۔ رپورٹ کے مطابق اس معاملے میں روس کے نائب وزیر خارجہ سرگئی ریابکوف نے کہا کہ امریکہ کے اس ناپسندیدہ عمل سے عالمی سطح پر فوجی تنازعات پیدا ہوں گے۔ واضح رہے کہ امریکہ نے سرد جنگ کے زمانے میں روس کے ساتھ تخفیف اسلحہ کے معاہدے سے علاحدہ ہونے کے بعد کیلی فورنیا کے ایک جزیرے پر درمیانہ دوری تک مار کرنے والے کروز میزائل کے کامیاب تجربے کا اعلان کیا ہے، جس پر چین اور روس نے تنقید کی ہے۔

 

۔ شام کی فوج  نے خان شیخون سے باغیوں کو بھاگنے پر کیا مجبور

۔ شام میں سرکاری فوجوں کی باغیوں کو اہم شہروں اور علاقوں سے نکالنے کی کوششیں جاری ہیں۔ اسی کے تحت سرکاری فوجوں نے شام کے اصل باغی گروپ کو ادلب صوبے سے پسپائی کےلئے مجبور کردیا ہے۔ جہاں اس نے اپنی پیش قدمی جاری رکھی ہے۔ اسی سے متعلق روزنامہ اسٹیٹس مین کی ایک رپورٹ کے مطابق ادلب سے باغی گروپوں اور حزب اختلاف کے کارکنان کی پسپائی کے بعد سرکاری فوجوں نے مضافاتی علاقے خان شیخون کے شمالی اور مغربی علاقوں کی جانب سے پیش قدمی شروع کردی ہے جسے صدر حافظ الاسد کی فوجوں کے لئے ایک بڑی کامیابی تسلیم کیا جارہا ہے۔ رپورٹ کے مطابق سرکاری فوجوں کے لئے شمال مغربی صوبے کو آخری معرکہ مانا جارہا ہے جہاں القاعدہ سے تعلق رکھنے والے ایک باغی گروپ کا قبضہ ہے۔ رپورٹ کے مطابق سرکاری فوجوں اور باغیوں کے درمیان متوقع تصادم کے سبب ادلب اور حما صوبوں سے تقریباً نصف ملین سے زائد شہری محفوظ مقامات کی تلاش میں ہجرت کرچکے ہیں جہاں سرکاری فوجوں نے زبردست بمباری اور فضائی حملوں سے باغیوں کو پسپائی کے لئے مجبور کردیا ہے۔ رپورٹ میں شام کی سرکاری ٹیلی ویژن رپورٹ کے حوالے سے مزید کہا گیا ہے کہ سرکاری فوجوں نے خان شیخون کے متعدد علاقوں پر قبضہ کرلیا ہے۔

 

۔ ذاکر نائک کا اظہار معذرت، ملیشیا کی عوامی سرگرمیوں میں شرکت پر پابندی

۔ ہندوستان کے متنازعہ اسلامی مبلغ ذاکر نائک نے ملیشیا میں اپنے نسل پرستانہ بیان پر معافی مانگ لی ہے جبکہ ملیشیا کی پولیس نے دس گھنٹے کی پوچھ گچھ کے بعد ذاکر نائک پر عوامی سرگرمیوں میں حصہ لینے پر پابندی عائد کردی ہے۔ اسی سے متعلق روزنامہ انڈین ایکسپریس کی ایک رپورٹ کے مطابق ذاکر نائک نے اپنے ایک بیان میں کہا کہ ان کا مقصد کسی انفرادی یا سماجی طبقے کی دل آزاری نہیں تھا۔ رپورٹ میں مزید کہا گیا ہے کہ ذاکر نائک نے کثیر نسلی ملک ملیشیا کی اقلیتی ہندو اور چینی شہریوں کے خلاف اپنے 8 اگست کے بیان میں نسل پرستانہ تبصرہ کیا تھا جس کے لئے انہوں نے معافی مانگ لی ہے۔ رپورٹ کے مطابق اس معاملے میں تحقیقات کے لئے ذاکر نائک کو پیر کو دوبارہ پولیس ہیڈ کوارٹر طلب کیا گیا تھا جہاں وہ پیر کو سہ پہر سوا تین بجے اپنے وکیل کے ہمراہ پہنچے تھے اور پوچھ تاچھ کے بعد منگل کی رات ڈیڑھ بجے واپس ہوئے۔ واضح رہے کہ ذاکر نائک مبینہ منی لانڈرنگ اور اپنی مشتعل تقاریر سےلوگوں کے جذبات بھڑکانے کے معالات میں سال 2016 سے حکومت ہند کو مطلوب ہے۔ ذاکر نائک پر اس سے قبل ملیشیا کے جوہور، سبیلانگور، پینانگ، کیدہ،سراوک اور میلا کا کی ریاستوں میں بھی پابندی کردی گئی تھی۔

 

۔ اٹلی کے وزیراعظم کا استعفی

۔اٹلی میں ملک کے وزیراعظم کے استعفی کے بعد جاری سیاسی بحران نے شدت اختیار کرلی ہے۔ اسی سے متلق روزنامہ ہندو کی ایک رپورٹ کے مطابق اٹلی کے وزیراعظم گیوسپ کو نٹے  نےمنگل کو وزارت عظمی سے مستعفی ہونے کا اعلان کیا ۔ انہوں نے اپنے ایک بیان میں اپنے وزیر داخلہ ماتیو سالوینی کو ملک میں سیاسی بحران کا ذمہ دار قرار دیتے ہوئے کہا کہ انہوں نے اپنے ذاتی اور سیاسی مفاد کے لئے معیشت کو خطرات سے دوچار کردیا ہے۔ وزیراعظم کونٹے نے پارلیمنٹ کے موسم گرما کی تعطیل کے باوجود ہنگامی اجلاس طلب کیا اور 14 مہینے پرانی مخلوط حکومت سے علاحدگی کا اعلان کیا۔ اپنے بیان میں انہوں نے اپنی حکومت میں شامل وزیر داخلہ ماتیو سالوینی کو تنقید کا نشانہ بناتے ہوئے کہا کہ سالوینی نے حکومتی اتحاد سے علاحدگی کا فیصلہ کرکے انتہائی خود غرضی کا مظاہرہ کیا ہے۔ ان کے اس فیصلے نے اٹلی کو سیاسی بے یقینی اور معاشی عدم استحکام کا شکار بنادیا ہے۔ واضح رہے کہ دو ہفتے قبل ماتیو سالوینی نے عوامیت پسند جماعت کے ساتھ اپنا اتحاد ختم کرنے کا اعلان کرکے سب کو حیرت میں ڈال دیا تھا۔ رپورٹ میں مزید کہا گیا ہے کہ جناب سالوینی نے جناب کونٹے کے الزامات کی تردید کی ہے۔

 

۔چندریان۔2 کامیابی کے ساتھ چاند کے مدار میں داخل 

۔ ہندوستان کی خلائی تحقیق کی تنظیم اسرو نے چندریان۔2 کو چاند کے مدار میں داخل کرکے خلائی تحقیق میں ایک اور نیا سنگ میل قائم کرلیا ہے۔ اسی سے متعلق روزنامہ ایشین ایج کی ایک رپورٹ کے مطابق ہندوستان کے خلائی تحقیق کے سائنسدانوں نے چندریان۔2 کو سات ستمبر کو چاند کی سطح پر اتارنے کی اپنی مہم کے دوران منگل کو چندریان کے چاند کے مدار میں داخلے کے پیچیدہ عمل کو بخوبی انجام دے دیا۔ رپورٹ کے مطابق 142 ملین ڈالر کی لاگت سے خلا میں بھیجے جانے والے اس مشن کو کامیابی کے ساتھ انجام دینے کا سلسلہ جاری ہے۔ اس مشن کے تحت خلائی سائنسداں آئندہ 14 دنوں کے دوران چاند کے جنوبی قطب کی سطح کا جائزہ لیں گے۔ علاوہ ازیں چاند کی سطح پر پانی یا اس کے آثار تلاش کرنے کی کوششیں بھی کی جائیں گی۔ رپورٹ میں اسرو کے سربراہ ڈاکٹر کے سیوان کے حوالے سے مزید کیا گیا ہے کہ چندریان۔2 کو چاند کے مدار میں داخل کرنے کا پیچیدہ عمل منگل کی صبح نو بجکر دو منٹ پر  شروع کیا گیا جسے 29 منٹ میں کامیابی کے ساتھ مکمل کرلیا گیا۔ واضح رہے کہ چندریان۔2 کا وزن تین اعشاریہ 8 ٹن ہے۔ یہ مشن اپنی روانگی سے زمین سے چاند تک تین لاکھ 84 ہزار کلومیٹر کا فاصلہ طے کرکے چاند کے مدار میں پہنچا ہے۔