18.03.2020

۔ کورونا وائرس کے تعلق سے امریکہ اور چین کی ایک دوسرے پر الزام تراشی

۔ دنیا میں تیزی کے ساتھ پھیلنے والے موذی کورونا وائرس کے معاملے میں امریکہ اور چین کے درمیان جاری لفظی جنگ میں  تیزی آتی جارہی ہے اور دونوں ہی ممالک نے اس وائرس کے لئے ایک دوسرے پر الزام تراشی کی ہے۔ اسی سے متعلق روزنامہ انڈین ایکسپریس کی ایک رپورٹ کے مطابق امریکہ اور چین دونوں ملکوں نے کورونا وائرس کے تعلق سے ایک دوسرے  پر ساکھ کو نقصان پہنچانے کا الزام عائد کیاہے۔ چین نے امریکہ کے صدر ڈونالڈ ٹرمپ کے ایک حالیہ بیان میں کورونا وائرس کو چینی وائرس کہنے پر شدید ردعمل کا اظہار کیا ہے جبکہ صدر امریکہ نے اپنے بیان میں کورونا کو چینی وائرس کہنے کا دفاع کرتے ہوئے کہا ہے کہ چونکہ یہ وائرس چین سے شروع ہوا ہے، اس لئے اسے چینی وائرس کہنے میں کوئی برائی نہیں ہے۔ رپورٹ میں مزید کہا گیا ہےکہ اس سے قبل چین نے اپنے ملک میں کورونا وائرس پھیلنے اور اس کے سبب ہونے والے جانی و مالی  نقصان کے لئے امریکی فوج پر سازش کا الزام عائد کیا تھا جس کی امریکہ نے تردید کی تھی۔

 

۔ کورونا وائرس کی روک تھام کے لئے امریکہ کی طبی آزمائش شروع

۔ کورونا وائرس کی روک تھام کے لئے عالمی پیمانے پر کوششیں جاری ہیں۔ اس کے تحت امریکہ نے اس موذی وائرس کی روک تھام اور خاتمے کے لئے طبی آزمائش شروع کردی ہے۔ اسی سے متعلق روزنامہ ٹریبیون کی ایک رپورٹ کے مطابق امریکہ نے ہندوستان اور ناروے کی زیر قیادت ایک عالمی اتحاد کی مدد سے کورونا وائرس سے بچانے والے ٹیکے کی طبی آزمائش شروع کردی ہے۔ امریکہ کے صدر ڈونالڈ ٹرمپ نے وہائٹ ہاؤس میں منعقد ایک پریس کانفرنس میں کہا کہ عالمی پیمانے پر سات ہزار سے زائد اموات کا سبب بننے والے کورونا وائرس سے بچانے والے ٹیکے کی طبی آزمائش شروع ہوگئی ہے جبکہ اس موذی وائرس کے علاج اور دیگر طریقہ کار کے لئے کوششیں جاری ہیں۔

 

۔ کورونا کے سبب ملک میں تیسری موت، وزارت صحت کی ایچ آئی وی ادویات کے استعمال کو منظوری

۔ ہندوستان میں موذی کورونا وائرس سے ہونے والی تیسری موت کے بعد حکومت ہند نے 60 برس سے زائد عمر کے کورونا وائرس سے متاثر افراد کے علاج میں ایچ آئی وی کی روک تھام والی ادویات کے استعمال کی اجازت دے دی ہے۔ اسی سے متعلق روزنامہ انڈین ایکسپریس کی ایک رپورٹ کے مطابق ممبئی میں دبئی سے آنے والے 63 سالہ شخص کی کورونا وائرس کے سبب موت ہوگئی۔ اس کے ساتھ ہی ہندوستان میں کورونا وائرس کے سبب مرنے والوں کی تعداد تین ہوئی ہے جبکہ کورونا وائرس سے متاثرہ افراد کی تعداد 137 تک پہنچ گئی ہے۔ رپورٹ میں مزید کہا گیا ہے کہ اٹلی کے دو سیاحوں کا جے پور میں علاج جاری ہے۔ 69 سالہ شخص اور اس کی 70 سالہ بیوی کورونا وائرس سے متاثر تھے اور ان کے علاج میں ایچ آئی وی کے علاج میں استعمال ہونے والی ادویات کا سہارا لیا گیا۔ رپورٹ میں دونوں کی حالت میں سدھار بتایا گیا ہے۔ رپورٹ میں مزید کہا گیا ہے کہ مرکزی وزارت برائے صحت نے 60 برس سے زائد عمر کے مریضوں کے علاج میں طبی صورتحال کے اعتبار سے ایچ آئی وی کی روک تھام والی دواؤں کو استعمال کرنے کی اجازت دے دی ہے۔

 

۔ وزارت عظمی کے لئے حزب اختلاف کےامیدوار کا انتخاب بنجامن نتن یاہو کے لئے زبردست سیاسی دھچکا

۔ اسرائیل میں وزارت عظمی کے تعلق سے سیاسی افرا تفری ہے جہاں متعدد سیاسی تنظیموں نے حزب اختلاف کے رہنما کی حمایت کرنے کا اعلان کیا ہے جس سے وزیراعظم بنجامن نتن یاہو کے سیاسی کیریئر کو خطرہ لاحق ہوگیا ہے۔ اس سلسلے میں روزنامہ اسٹیٹس مین نے بنجامن نتن یاہو کے سیاسی کیریئر کے خاتمےپر اداریہ تحریر کیا ہے۔ اداریہ میں اسرائل کی وزارت عظمی کے لئے حزب اختلاف کے بینی گینٹز  کے انتخاب کو بنجامن نتن یاہو کی زبرست سیاسی شکست سے تعبیر کیا ہے۔ واضح رہے کہ جناب نتن یاہو کی پارٹی لیکوڈ نے سال 2019 کے تیسرے چناؤ میں کامیابی حاصل کی تھی لیکن گزشتہ ایک برس سے اسرائیل میں سیاسی صورتحال واضح نہیں تھی۔ اسرائیل کے صدر نے ملک میں حکومت کے قیام کے لئے کئی مرتبہ دونوں دعویداروں بنجامن نتن یاہو اور بین گینٹز سے باہمی رضامندی سے معاملے کے حل کےلئے کہا لیکن اس میں کامیابی نہیں مل سکی۔ رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ بینی گینٹز کے انتخاب سے بنجامن نتن یاہو کو ایک زبردست سیاسی دھچکا لگا ہے۔

 

۔ امریکہ کی زیر قیادت اتحادی فوج کی عراقی فوجی ٹھکانوں سے روانگی

۔ امریکہ کی زیر قیادت اتحادی فوجوں نے عراق کے اپنے متعدد ٹھکانوں سے انخلا کا عمل شروع کردیا ہے۔ اسی سے متعلق روزنامہ ایشین ایج کی ایک رپورٹ کے مطابق عراق میں امریکہ کی زیر قیادت اتحادی فوج کی از سرنو تعیناتی کا فیصلہ کیا گیا ہے، جس کے تحت عراق کے فوجی ٹھکانوں سے اتحادی فوج کو عراق سے باہر تعینات کیا جائے گا۔ اتحادی فوج والے ایک فوجی ٹھکانے پر راکٹ سے حملے کے چند گھنٹوں بعد اتحادی فوج کی از سرنو تعیناتی کا اعلان منظر عام پر آیا۔ اس سلسلے میں شام کی سرحد سے متصل مغربی عراقی فوجی ٹھکانے قیم  سے اتحادی فوج کی منتقلی کا عمل شروع ہوگیا ہے۔ اس فوجی ٹھکانے پر ایک منتقلی تقریب بھی منعقد کی گئی جس میں اتحادی فوج نے اس فوجی ٹھکانے کو عراقی فوج کے سپرد کیا۔ رپورٹ میں ذرائع کے حوالے سے اس فیصلے کو تاریخی قرار دیتے ہوئے مزید کہا گیا ہے کہ قیم فوجی ٹھکانے سے اتحادی فوج کے تقریباً 300 اہلکار روانہ ہوگئے ہیں۔

 

۔ جموں و کشمیر میں ہمہ جہت ترقی کے لئے حکومت ہند کے متعدد اقدامات

۔ حکومت ہند نے مرکز کے زیر انتظام علاقے جموں و کشمیر میں معاشی ترقی سمیت ہمہ جہت ترقی کے لئے کوششیں تیز کردی ہیں اور جموں و کشمیر کے صنعت کاروں کو صنعت لگانے کے لئے علاقے کی 15000 ہیکٹیئر اراضی پیش کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔ اسی سے متعلق روزنامہ ٹائمز آف انڈیا کی ایک رپورٹ کے مطابق مرکزی وزیر داخلہ امیت شاہ اور وزیر مالیات نرملا سیتا رمن نے جموں و کشمیر کے مختلف معاشی زمروں کے نمائندوں کو ہمہ جہت ترقی میں مرکزی حکومت کی جانب سے بھرپور تعاون کا یقین دلایا۔ رپورٹ کے مطابق مرکزی حکومت کے ذریعہ صنعتوں کے قیام کے لئے 15000 ہیکیٹئر اراضی کی فراہمی سے جموں و کشمیر کو نہ صرف ملک کی دیگر ریاستوں کے برابر آنے کا موقع ملے گا بلکہ اس سے جموں و کمشیر میں ملازمت اور روزگار کے مواقع بھی فراہم ہوں گے۔ جناب امیت شاہ اور محترمہ نرملا سیتا رمن نے جموں و کشمیر کے نمائندوں کی شکایات اور سفارشات کو بغور سنا اور نمائندوں کو آنے والے دنوں میں جموں و کشمیر میں سرمایہ کاری سے متعلق اقدامات کرنے کا بھی یقین دلایا۔

 

۔ مشترکہ اعلامیہ میں جموں و کشمیر کے تذکرے پر حکومت ہند کی چین سے اظہار ناراضگی

۔ حکومت ہند نے جموں و کشمیر کو ہندوستان کا اٹوٹ حصہ قرار دیتے ہوئے چین اور پاکستان کے درمیان مشترکہ اعلامیہ میں جموں و کشمیر کے تذکرے پر شدید ردعمل ظاہر کیا ہے۔ اسی سے متعلق روزنامہ ٹائمز آف انڈیا کی ایک رپورٹ میں وزارت خارجہ کے ترجمان رویش کمار کے حوالے سے کہا گیا ہے کہ ہندوستان دیگر ممالک کا احترام کرتا ہے اور چاہتا ہے کہ دیگر ممالک بھی اسی طرح کا رویہ اختیار کریں۔ جناب رویش کمار نے کہا کہ چین کو ہندوستان کے اندرونی معاملات، خود مختاری اور علاقائی یکجہتی پر تبصرے سے گریز کرنا چاہیے۔ واضح رہے کہ پاکستان کے صدر عارف علوی کے حالیہ دورہ چین کے دوران مشترکہ اعلامیہ میں جموں و کشمیر کا تذکرہ کیا گیا تھا۔ رپورٹ میں مزید کہا گیا ہے کہ چین سمیت تمام ممالک کو ہندوستان کے اندرونی معاملات میں مداخلت کا کوئی حق نہیں ہے۔

 

۔ وزیراعظم نے کی بنگلہ دیش کی پالیسیوں کی ستائش

۔ ہندوستان نے بنگلہ دیش کے بانی شیخ مجیب الرحمان کے یوم پیدائش کی تقریبات کے موقع پر شمولی اور معاشی ترقی کے لئے بنگلہ دیش کی پالیسیوں کی ستائش کی ہے۔ اسی سے متعلق روزنامہ ہندوستان ٹائمز کی ایک رپورٹ کے مطابق وزیراعظم نریندر مودی نے اس موقع پر ایک ویڈیو پیغام میں کہا ہے کہ بنگلہ دیش نے سماجی اور معاشی ترقی میں نئے سنگ میل قائم کئے ہیں۔ انہوں نے اس پیغام میں پاکستان کا نام لئے بغیر کہا کہ ہم سب کو اس کا بخوبی علم ہے کہ کسی طرح سے سماج اور ملک کو تباہ کرتے ہوئے دہشت گردی اور تشدد کو ہتھیار بنایا جارہا ہے۔ دنیا گواہ  ہے کہ دہشت گردی کی حمایت کرنے والے ملک کا کیا حال ہے جبکہ بنگلہ دیش نے اپنی بہترین پالیسیوں سے ترقی کی نئی بلندیوں کو چھولیا ہے۔ اپنے پیغام میں وزیراعظم نے مزید کہا کہ ہندوستان اور بنگلہ دیش نے گزشتہ پانچ چھ برسوں کے دوران باہمی تعلقات میں زبردست پیش قدمی کی ہے۔

 

۔ عدنان زرفی عراق کے نئے وزیراعظم نامزد

۔ امریکہ کے ساتھ خوشگوار تعلقات رکھنے والے معتدل شیعہ رہنما عدنان زرفی کو عرق کا نامزد وزیراعظم بنایا گیا ہے۔ اسی سے متعلق روزنامہ پائنیر کی ایک رپورٹ کے مطابق اس سال عراق کے دوسرے نامزد وزیراعظم عدنان زرفی کو سلامتی اور خدمات عامہ پر خصوصی توجہ کے لئے احترام کی نگاہ سے دیکھا جاتا ہے۔ تاہم امریکہ کے ساتھ قریبی تعلقات کے لئے چند گروپ ان سے نالاں بھی رہتے ہیں۔ 54 سالہ عدنان زرفی مذہبی علوم میں ڈگری یافتہ ہیں اور عراق کے سابق آمر صدام حسین کی کٹر مخالف دعوۃ پارٹی کے ایک عرصے تک ممبر رہے ہیں۔ وہ شیعہ اکثریتی شہر نجف کے بھی گورنر رہ چکے ہیں۔ رپورٹ میں مزید کہا گیا ہے کہ سال 1991 میں صدام حسین کے خلاف ناکام بغاوت کے بعد وہ سعودی عرب فرار ہوگئے تھے اور وہاں سے امریکہ چلے گئے تھے۔ سال 2003 میں امریکہ کی زیر قیادت عراق پر فوجی جارحیت کے بعد وہ عراق واپس آگئے تھے۔